عن أبي هريرة رضي الله عنه مرفوعاً: «إنَّ الله لا ينْظُرُ إِلى أجْسَامِكُمْ، ولا إِلى صُوَرِكمْ، وَلَكن ينْظُرُ إلى قُلُوبِكمْ وأعمالكم».
[صحيح] - [رواه مسلم]
المزيــد ...

ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ”اللہ تمھارے جسموں اور تمھاری شکلوں کی طرف نہیں دیکھتا، بلکہ وہ تو تمھارے دلوں اور اعمال کی طرف دیکھتا ہے“۔
صحیح - اسے امام مسلم نے روایت کیا ہے۔

شرح

اللہ تعالی تمہیں تہمارے جسموں اور تمہاری صورتوں پر ثواب اور جزاء نہیں دیتے اور نہ ہی ان کی وجہ سے تمہیں اللہ کی خوشنودی حاصل ہوتی ہے بلکہ جزاء تو دل میں موجود اخلاص و سچائی اور ان نیک اعمال پر ملتا ہے جنہیں تم سر انجام دیتے ہو۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان اسپینی ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان فارسی زبان تجالوج ہندوستانی سنہالی کردی ہاؤسا پرتگالی مليالم تلگو سواحلی تمل بورمی جرمنی جاپانی
ترجمہ دیکھیں

فوائد

  1. دل کی حالت، اس کی صفات، اس کے مقاصد کو درست رکھنے اور اسے ہر بری صفت سے پاک کرنے پر توجہ۔
  2. اعمال کے ثواب کا دار و مدار دل کے اخلاص اور اچھی نیت پر ہے۔
  3. دل اور اس کی صفات کی اصلاح کا خیال رکھنا اعضا کے عمل پر مقدم ہے،کیوں کہ دل کا عمل ہی شرعی اعمال کودرست رکھتا ہے اور کافر کا کوئی عمل درست نہیں ہوتا۔
  4. ہر شخص سے اس کی نیت اور اس کے عمل کے بارے میں سوال کیا جائے گا اور یہ اسے دل کے عمل کو ہر اس چیز کے لیے درست کرنے پر آمادہ کرتی ہے، جس سے اللہ اور اس کے رسول خوش ہوں۔
مزید ۔ ۔ ۔