+ -

عن عبد الله بن عمر رضي الله عنهما عن النبي صلى الله عليه وسلم قال: «من تَشبَّه بقوم، فهو منهم».
[حسن] - [رواه أبو داود وأحمد]
المزيــد ...

عبد اللہ ابن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ”جس نے کسی قوم کی مشابہت اختیار کی وہ انہیں میں سے ہے“۔
حَسَنْ - اسے امام ابو داؤد نے روایت کیا ہے۔

شرح

حدیث میں عموم ہے۔ جس نے نیک لوگوں کی مشابہت اختیار کی وہ نیک ہو گا اور میدانِ محشر میں وہ انہی کے ساتھ ہو گا اور جس نے کافروں یا فاسق لوگوں کی مشابہت اختیار کی وہ انہی کے طریقے اور راستے پر ہو گا۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان اسپینی ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان فارسی زبان تجالوج ہندوستانی ویتنامی سنہالی ایغور کردی ہاؤسا پرتگالی مليالم تلگو سواحلی تمل بورمی تھائی جرمنی جاپانی پشتو آسامی الباني السويدية الأمهرية الهولندية الغوجاراتية الدرية
ترجمہ دیکھیں

حدیث کے کچھ فوائد

  1. کفّار کی مشابہت اختیار کرنے کی ممانعت۔
  2. صالحین کی مشابہت اختیار کرنے کی ترغیب۔
  3. وسائل مقاصد کے احکام کا حکم رکھتے ہیں۔ لہذا ظاہری مشابہت باطنی محبت کا سبب بنتی ہے۔
  4. تفصیلی طور پر مشابہت کے سارے احکام بیان کرنا ممکن نہیں ہے، کیوں کہ یہ مشابہت کی نوعیت اور اس کے نتیجے میں پیدا ہونے والی برائیوں کی نوعیت کے اعتبار سے الگ الگ ہوا کرتے ہیں۔ اس زمانے میں تو معاملہ اور بھی پیچیدہ ہو گیا ہے۔ لہذا ہر مسئلے کو شرعی نصوص کی کسوٹی پر پرکھنا ضروری ہے۔
  5. کفار کی مشابہت اختیار کرنے کی ممانعت سے مراد ان کے دین اور ان کے مخصوص رسوم و رواج میں ان کی مشابہت اختیار کرنے سے منع کرنا ہے۔ رہی بات دین اور رسوم و رواج کے علاوہ ديگر امور جیسے دست کاری وغیرہ سیکھنے کی، تو وہ اس ممانعت میں داخل نہیں ہیں۔
مزید ۔ ۔ ۔