عن أبي هريرة -رضي الله عنه- قال، قال: رسول الله -صلى الله عليه وسلم-: «اثنتان في الناس هما بهم كفر: الطعن في النسب، والنياحة على الميت».
[صحيح.] - [رواه مسلم.]
المزيــد ...

ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ”دو چیزیں لوگوں میں ایسی ہیں جو ان کے کفر کا باعث ہیں: نسب میں طعن کرنا اور میت پر نوحہ کرنا“۔
صحیح - اسے امام مسلم نے روایت کیا ہے۔

شرح

نبی ﷺ بتا رہے ہیں کہ لوگوں میں کفر کی خصلتوں میں سے دو خصلتیں باقی رہیں گی۔ ان سے صرف وہی بچے گا جسے اللہ تعالی محفوظ رکھے۔ اول: نسبوں میں عیب جوئی کرنا اور نقص نکالنا۔ دوم: کسی مصیبت کے آنے پر تقدیر پر اظہار ناراضگی کرتے ہوئے زور زور سے چیخنا۔ یہ کفر اصغر ہے۔ اور جس شخص میں کفر کے شعبوں میں سے کوئی شعبہ پایا جائے وہ ایسا کافر نہیں ہو جاتا جو اسے ملت اسلام ہی سے خارج کردے، جب تک کہ اس کے اندر کفر اکبر کی حقیقت نہ پائی جائے۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان اسپینی ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان فارسی زبان تجالوج ہندوستانی کردی ہاؤسا پرتگالی
ترجمہ دیکھیں