عن حذيفة رضي الله عنه عن النبي صلى الله عليه وسلم قال: «لا يدخل الجنة قَتَّات».
[صحيح] - [متفق عليه]
المزيــد ...

حذیفہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا: ”جنت میں چغل خور نہیں جائے گا“۔
صحیح - متفق علیہ

شرح

اس حدیث مبارک میں نبی کریم ﷺ، چغل خوری یعنی لوگوں کے درمیان بگاڑ پیدا کرنے کے مقصد سے باتیں پھیلانا والے کو سخت ترین سزا کی وعید سنا رہے ہیں کہ وہ جنت میں داخل نہ ہوگا۔ یعنی ابتدائی طور پر ایسا شخص جنت میں نہ جائے گا، بلکہ اس سے قبل بقدر گناہ اس کو عذاب کا مزہ چکھایا جائےگا۔ ”قَتَّات“ ہی کو ”نَمَّام“ (چغل خور) کہتے ہیں۔ اس حدیث سے اس بات کا پتہ چلتا ہے کہ یہ عمل کرنے والا کبیرہ گناہ کا مرتکب ہوگا۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان اسپینی ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان فارسی زبان ہندوستانی سنہالی کردی ہاؤسا پرتگالی مليالم تلگو سواحلی تمل بورمی جرمنی جاپانی
ترجمہ دیکھیں

فوائد

  1. چغل خوری ایک بڑا گناہ ہے، کیوں کہ اس کے بڑے برے اثرات اور سنگین نتائج سامنے آتے ہیں۔
  2. شریعت اسلامی کے اندر وہ ساری باتیں موجود ہیں، جو مسلمانوں کے درمیان باہمی الفت کو فروغ دیتی ہیں۔