عن أبي أمامة إياس بن ثعلبة الحارثي -رضي الله عنه- مرفوعاً: «من اقْتَطَعَ حَقَّ امرئٍ مسلم بيمينه، فقد أَوْجَبَ اللهُ له النارَ، وحَرَّمَ عليه الجنةَ» فقال رجل: وإن كان شيئا يسيرا يا رسول الله؟ فقال: «وإنْ قَضِيبًا من أَرَاكٍ».
[صحيح.] - [رواه مسلم.]
المزيــد ...

ابو امامہ اياس بن ثعلبہ حارثی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ”جس نے جھوٹی قسم کھا کر کسی مسلمان کا حق مارا، اس کے لیے اللہ نے جہنم کو واجب اور جنت کو حرام کردیا“۔ ایک شخص نے سوال کیا : اے اللہ کے رسول! چاہے وہ چیز تھوڑی سی ہی کیوں نہ ہو؟ آپ ﷺ نے فرمایا: ”اگر چہ پیلو کے درخت کی ایک چھوٹی سی ٹہنی ہی ہو“۔
صحیح - اسے امام مسلم نے روایت کیا ہے۔

شرح

رسول اللہ ﷺ بیان فرما رہے ہیں کہ جس نے جھوٹی قسم اٹھا کر کسی مسلمان کا حق مار لیا، اس کے لیے اللہ تعالی نے جہنم واجب کر دی اور جنت حرام کر دی۔ اس پر ایک شخص نے پوچھا: یا رسول اللہ! اگرچہ یہ چیز بہت تھوڑی ہی کیوں نہ ہو؟ اس پر نبی ﷺ نے فرمایا: اگرچہ یہ چیز پیلو کی ایک ٹہنی ہی کیوں نہ ہو۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان اسپینی ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان فارسی زبان تجالوج ہندوستانی ایغور کردی ہاؤسا پرتگالی
ترجمہ دیکھیں