عن عكرمة أن عليا -رضي الله عنه- حَرَّقَ قوما، فبلغ ابن عباس فقال: لو كنت أنا لم أُحَرِّقْهُم لأن النبي -صلى الله عليه وسلم- قال: «لا تُعَذِّبُوا بعذاب الله»، ولَقَتَلْتُهُم كما قال النبي -صلى الله عليه وسلم-: «من بَدَّلَ دِينَهُ فاقتلوه».
[صحيح.] - [رواه البخاري.]
المزيــد ...

عکرمہ سے روایت ہے کہ علی رضی اللہ عنہ نے کچھ لوگوں کو جلا دیا۔ جب عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہما کو اس کی اطلاع ملی، تو فرمایا : اگر میں ہوتا، تو ان کو نہ جلاتا، کیونکہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے: "تم لوگ اللہ کے عذاب کے ذریعے عذاب مت دو"۔ بلکہ میں ان کو قتل کر دیتا، جیسا کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے: "جو اپنا دین بدل لے، اسے قتل کر دو"۔
صحیح - اسے امام بخاری نے روایت کیا ہے۔

شرح

اس حدیث سے معلوم ہوتا ہے کہ کچھ زندیق جب اللہ کے دین سے پھر گئے، تو علی رضی اللہ عنہ نے ان کو جلا دیا۔ اس کی اطلاع عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہما کو ملی، تو فرمایا: اگر میں ان کی جگہ پر ہوتا، تو ان کو نہ جلاتا، کیونکہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے آگ سے جلانے سے منع کیا ہے۔ ساتھ ہی یہ کہ جو مسلمان ہونے کے بعد اپنا دین بدل لے اس کی سزا اسے جلانا نہیں، بلکہ قتل کر دینا ہے اور اس میں مرد اور عورت کے بیچ کوئی فرق نہیں ہے۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان چینی زبان فارسی زبان ہندوستانی
ترجمہ دیکھیں