عن علي -رضي الله عنه-: أن النبي -صلى الله عليه وسلم- طَرَقَه وفاطمة ليلاً، فقال: «ألا تُصَلِّيَانِ؟».
[صحيح.] - [متفق عليه.]
المزيــد ...

علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبیﷺ رات کے وقت ان کے اور فاطمہ رضی اللہ عنہا کے پاس تشریف لائے تو فرمایا "کیا تم دونوں نماز (تہجد) نہیں پڑھتے؟"۔

شرح

حدیث کا مفہوم: علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ بتا رہے ہیں کہ نبی ﷺ ان کے اور فاطمہ رضی اللہ عنہا کے پاس رات کے وقت تشریف لائے تو دونوں کو سوتے ہوئے پایا۔(اس پر) آپ ﷺ نے ان دونوں کو جگا کر فرمایا کیا تم دونوں نماز (تہجد) نہیں پڑھتے؟۔ نبی ﷺ نے انہیں رات کی نماز (تہجد) پڑھنے کی ترغیب دی اور ان کے راحت و سکون پر ان کے لیے اس فضیلت کو ترجیح دی کیونکہ آپ ﷺ اس کی فضیلت سے واقف تھے۔ اگر ایسا نہ ہوتا تو آپ ﷺ اپنی بیٹی اور اپنے چچا کے بیٹے کو ایسے وقت میں بے آرام نہ کرتے جسے اللہ نے اپنی مخلوق کے لیے آرام کے لیے بنایا ہے۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان ہسپانوی زبان ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان
ترجمہ دیکھیں