عن أنس بن مالك -رضي الله عنه- مرفوعاً: «مَا أَكْرَم شَابٌّ شَيخًا لِسِنِّه إِلاَّ قَيَّضَ الله لَهُ مَنْ يُكْرِمُه عِندَ سِنِّه».
[ضعيف.] - [راه الترمذي.]
المزيــد ...

انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ”جو جوان کسی بوڑھے کا اس کے بڑھاپے کی وجہ سے احترام کرے، اللہ تعالیٰ اس کے لیے ایسے لوگوں کو مقرر فرما دے گا، جو اس عمر میں (یعنی بڑھاپے میں) اس کا احترام کریں“۔

شرح

یہ حدیث ان احادیث میں سے ہے جو چھوٹوں کے ذریعے بڑوں کے احترام اور توقیر کے وجوب پر زور دیتی ہے۔ بہت سے ایسے دلائل ہیں جو اس عظیم معاشرتی اخلاقی رویے کی ترغیب دیتی ہیں۔ رسول اللہ ﷺ نے اپنے صحابہ رضی اللہ عنہم کو اس کی اس قدر تربیت دی کہ یہ ان کے دلوں اور ذہنوں میں رچ بس گیا۔ یہ حدیث مخاطب میں اس بات کا شعور پیدا کرتی ہے کہ بوڑھے کی عزت کرنا خود اپنی عزت کرنے کے مترادف ہے اور جوان کی طرف سے بوڑھے کی اس عزت و احترام کی بنا پر اللہ تعالی ایسے لوگوں کو متعین کر دے گا، جو اس کے بڑھاپے میں اس کی عزت و احترام کریں گے۔

ترجمہ: انگریزی زبان فرانسیسی زبان ہسپانوی زبان ترکی زبان انڈونیشیائی زبان بوسنیائی زبان روسی زبان بنگالی زبان چینی زبان
ترجمہ دیکھیں